Home / National News /

رکن قومی اسمبلی مولانا سید گوہر شا ہ اور جماعت اسلامی نے وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی کے دورہ چارسدہ کو 20لاکھ عوام کے ساتھ مذاق قرار دیا

رکن قومی اسمبلی مولانا سید گوہر شا ہ اور جماعت اسلامی نے وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی کے دورہ چارسدہ کو 20لاکھ عوام کے ساتھ مذاق قرار دیا

چارسدہ جرنلسٹس کے پروگرام “ملاقات “میں اظہار خیال کر تے ہوئے چارسدہ سے جمعیت علمائے اسلام کے رکن قومی اسمبلی مولانا سید گوہر شاہ اور جماعت اسلامی کے ضلعی امیر محمد ریاض خان نے کہا کہ وزیر اعظم پاکستان شاہد خاقان عباسی کے دورہ چارسدہ پر قومی خزانے سے کروڑوں روپے خرچ کئے گئے مگر انہوں نے چارسدہ کیلئے ایک روپے کے ترقیاتی منصوبے کا اعلان نہ کیا ۔ انہوں نے کہاکہ وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی شریف خاندان کے نوکر کی حیثیت سے شریف خاندان کے بہو تہمینہ درانی کو خوش کرنے کیلئے چارسدہ تشریف لائے اور کئی گھنٹوں تک ٹریفک کو جام کرکے عوام کو شدید پریشانی میں ڈال دیا ۔ مولانا سید گوہر شاہ کا کہنا تھا کہ قومی اسمبلی کے فلور پر وہ وزیر اعظم کے دورہ چارسدہ اور 20لاکھ عوام کے استحصال کے حوالے سے ضرور باز پرس کرینگے ۔ فاٹا انضمام کے حوالے سے فاٹا کے عوام کی رائے معلوم کرنا ضروری ہے ۔ جے یوآئی نواز شریف کی اتحادی ضرور ہے مگر اس کے کسی غیر قانونی اقدامات اور کرپشن کی حمایت نہیں کر تی ۔ عقیدہ ختم نبوت ﷺ کے حوالے سے بعض عناصر نے پارلیمنٹ سے دھوکہ دہی کی کو شش کی مگر بر وقت اس کا سد باب کیا گیا ۔ پروگرام میں اظہار خیال کر تے ہوئے جماعت اسلامی کے ضلعی امیر محمد ریاض خان نے کہاکہ جماعت اسلامی تحریک انصاف کی اتحادی ہے مگر جماعت اسلامی کا اپنا منشور ہے اور 14نکات پر تحریک انصاف حکومت سے اتحاد کیا گیا ہے۔جماعت اسلامی فاٹا انضمام اور پختونوں کا اتحاد چاہتی ہے تاکہ پختونوں کی آواز مزید موثر ہو جائے۔انہوں نے محمود خان اچکزئی کی طرف سے فاٹا انضمام کی مخالفت پر بھی شدید تنقید کی اور کہا کہ لر او بر یو پختون کے دعویدار اپنے نعرے سے مکر گئے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ خیبر پختونحوا میں زمینداروں کا استحصال جاری ہے ۔ ایک طرف شوگر ملز بند ہے جس کی وجہ سے گڑ کی قیمتیں کم ہو رہی ہے جبکہ دوسری طرف تمباکو کی قیمتیں بھی کم ہو رہی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ گدون میں افیون کی کاشت بند کرنے کیلئے وہاں پر انڈسٹریل سٹیٹ قائم کیا گیا جس کا فائدہ گدون او ر صوابی کے لوگوں کو ہو رہا ہے ۔ انہوں نے چارسدہ میں انڈسٹریل سٹیٹ قائم کرنے کا مطالبہ کیا ۔ ایم ایم اے کی بحالی کے حوالے سے دونوں رہنماؤں نے کہا کہ اختلاف رائے ایم ایم اے کی بحالی میں رکاوٹ نہیں بنے گی اور انشاء اللہ ایم ایم اے کی بحالی کا جلد باضابطہ اعلان کیا جائیگا۔ انہوں نے کہا کہ ایم ایم اے دور حکومت میں نفاذ اسلام کیلئے صوبائی حکومت نے حسبہ بل اسمبلی سے منظور کیا مگر دو بار جنرل مشرف نے سپریم کورٹ میں حسبہ بل روک دیا ۔ انہوں نے گندم کی خریداری پر بھی شدید تحفظات کا اظہار کیا اور کہا کہ پنجاب کے ڈیلروں سے محکمہ حوراک گندم خرید رہی ہے جس کی وجہ سے مقامی زمینداروں کا نقصان ہو رہا ہے ۔

Check Also

قومی وطن پارٹی کے ایم پی اے بیرسٹر سلطان محمد خان کا تحریک انصاف کو خراج تحسین ۔ آفتاب شیر پاؤ اور سکندر شیر پاؤ پر کھڑی تنقید

قومی وطن پارٹی کے ایم پی اے سلطان محمد خان نے چارسدہ پریس چیمبر میں …

Leave a Reply

error: Content is protected !!