Home / Latest /

چارسدہ کے بعض سکولوں میں بنیادی سہولیات تک میسر نہیں

چارسدہ کے بعض سکولوں میں بنیادی سہولیات تک میسر نہیں

چارسدہ(بیورو رپورٹ) صوبائی حکومت کے تعلیم کے میدان میں انقلابی دعوؤں کے باجود چارسدہ میں 20سے زائد پرائمری سکولز کرایہ کے عمارت میں واقع ہے جہاں پر طلبہ کے لئے کسی قسم کے سہولیات موجود نہیں ،گورنمنٹ پرائمری سکول شوگر مل 1971میں کرایہ کے عمارت میں قائم ہوا تھا جس سے 1995 میں بجلی کاٹ دی گئی تھی جو تاحال بحال نہ ہو سکیں،محکمہ تعلیم چارسدہ کے مطابق بار بار افسران بالہ کو مطلع کرنے کے باوجود مذکورہ سکول کے لئے عمارت کی تعمیر کے حوالے سے احکامات جار ی نہیں ہوئی۔تفصیلات کے مطابق صوبائی حکومت کے تعلیم کے میدان میں انقلابی دعوؤں کے باوجود ضلع چارسدہ میں 20سے زائد سرکاری سکولوں کو عمارت تک کی سہولت میسر نہ ہو سکی ،جس کے باعث سینکڑوں طلبہ وطالبات بنیادی سہولیات سے محروم عمارت میں بیٹھ کر تعلیم حاصل کر رہے ہیں ،اس سکولوں میں ایک گورنمنٹ گرلز پرائمری سکول شوگر مل بھی ہے جو سال 1971میں شوکر ملزکے ایک رہائشی کوارٹر میں قائم ہوا ،160طالبات پر مشتمل سکول میں طالبات کو کسی قسم کی سہولت میسر نہیں ،سکول ٹیچرز کے مطابق 1991میں شوگر ملز کے بند ہونے کے بعد سکول سے بجلی کاٹ دی گئی تھی جو تاحال بحال نہ ہوسکی ،7مرلہ زمین اور چار کمروں میں واقع سرکاری سکول پانی بجلی ،فرنیچر ،بلیک بورڈز جیسے بنیادی سہولیات سے محروم ہے جبکہ حالیہ مون سون بارشوں میں سکول کے ایک کمرے کی چھت بھی مکمل طور پر گر کر زمین بوس ہوگئی تھی ،سکول ٹیچر کے مطابق بارش کے دوران سکول کے تمام کمروں کے چھت ٹپکتے ہیں جبکہ سردیوں میں اندھیر ے جبکہ گرمیوں میں کمروں میں پنکھے اور بجلی نہ ہونے کی وجہ سے بچوں کو باہر دھوپ میں بٹھایا جاتا ہے ۔محکمہ تعلیم کی جانب سے سالانہ چند ہزار روپے پی ٹی سی فنڈ جاری کیا جاتا ہے جس سے سکول کے لئے سٹیشنری بمشکل پوری کی جاتی ہے۔سکول کے عمار ت کے حوالے سے سکول میں پڑھنے والی ایک بچی ہوا بی بی کا کہنا ہے کہ اس کے سکول میں کسی قسم کی سہولت میسر نہیں لیکن قریبی دوسرا سکول نہ ہونے کی وجہ سے وہ 70سال سے زئد پرانے عمارت میں پڑھنے پر مجبور ہے،اس حوالے سے محکمہ تعلیم کے اے ایس ڈی او عائشہ گوہر خان مطابق انہوں مذکورہ سکول کے لئے زمین شوگر ملز مالکان نے وقف کی تھی اور ان کی اجاز ت کے بغیر سکول میں کسی قسم کی تعمیراتی یا مرمتی کا کام ممکن نہیں ،اس لئے ہم نے ایم این اے اور ایم پی اے سمیت متعدد بار محکمہ تعلیم کے اعلیٰ حکام کو مذکورہ سکول کے حوالے سے آگاہ کیا ہے لیکن حکام بالہ کی جانب سے انہیں مذکورہ سکول کے تعمیر کے حوالے سے کسی قسم کی ہدایات جاری نہیں ہوئی ہے،دوسری جانب محکمہ تعلیم چارسدہ کے مطابق ضلع بھر میں 20 سے زائد ایسے سکول موجود ہے جو رکرایہ کے عمارت میں واقع ہے جن میں زیادہ تر سکولوں میں بنیادی سہولیات کا فقدان ہے ۔

Check Also

شہر کے مختلف علاقوں کی مین سیوریج لائنوں اور مین ہولوں میں سما ج دشمن و شر پسند عناصر کی جانب سے پتھر ،مٹی تعمیراتی ملبے اینٹوں اور دیگر

کراچی واٹربورڈ کے منیجنگ ڈائریکٹر سید ہاشم رضا زیدی نے شہر کے مختلف علاقوں کی …

Leave a Reply

error: Content is protected !!