Monday , 12 November 2018
Home / Education / طلبہ و طالبات اور اساتذہ کرام کا استعداد کا ر معلوم کرنے کے لئے جدید سافٹ وئیر کا استعمال شروع

طلبہ و طالبات اور اساتذہ کرام کا استعداد کا ر معلوم کرنے کے لئے جدید سافٹ وئیر کا استعمال شروع

خیبر پختون خوا میں تعلیمی انقلاب ۔ طلبہ و طالبات اور اساتذہ کرام کا استعداد کا ر معلوم کرنے کے لئے جدید سافٹ وئیر کا استعمال شروع ۔ سراج علی کی رپورٹ ملاحظہ کریں۔
خیبر پختون خوا میں تدریسی عمل اور تدریسی عملہ کا استعداد کارمعلوم کرنے اور طلباء کے سیکھنے کا اندازہ لگانے کے لئے محکمہ تعلیم نے جدید سافٹ وئیر اور سائنسی طریقہ کار اپنا یا ہے ۔ سکول کوالٹی منیجمنٹ پروگرام کے تحت محکمہ تعلیم کا ایک نمائندہ کلاس روم میں بیٹھ کر مدرس کے تدریسی عمل کو جدید سافٹ وئیر کے ذریعے جانج کر مدرس کے استعداد کار کا تعین کر تا ہے اور جن شعبوں میں مدرس کی کمزوری ہوتی ہے اس کی نشاندہی خودکار نظام کے سامنے خود بحود سامنے آتی ہے ۔ اسی طریقہ کار کے مطابق بچوں کی تعلیمی قابلیت بھی معلوم کی جاتی ہے اور جن مضامین اور شعبوں میں طلباء کمزور ہوتے ہیں ان کی نشاندہی بھی ہو تی ہے ۔
۔ اس حوالے سے محکمہ تعلیم ضلع چارسد ہ کے سرکل آفیسر عائشہ گوہر کا کہنا ہے کہ اگر مذکورہ نظام اسی طرح اسی جاری رہا تو تعلیمی میدان میں 100فی صد نتائج حاصل کئے جا سکتے ہیں۔ چارسدہ کے ایک سکول ٹیچر سلمہ بی بی کا کہنا ہے کہ آئے روز تعلیمی نظام میں تبدیلی آرہی ہے مگر جو جدید طریقہ کار اور نظام اپنایا گیا ہے اس سے تدریسی عملہ کے ساتھ ساتھ طلباء کی خامیاں اور کمزوریاں آسانی سے معلوم ہو تی ہے۔یاد رہے کہ مذکورہ پر وگرام گزشہ مہینے میں شروع ہو چکا ہے اور ہر مہینے سرکل کی سطح پر دس سکولوں میں طلباء اور تدریسی کی تعلیمی استعداد کار معلوم کی جاتی ہے ۔ ۔ خیبر پختونخوا میں تعلیم کی شرخ 53 فی صد ہے جبکہ صوبائی حکومت نے رواں سال تعلیم کیلئے 138بلین روپے بجٹ مختص کیا ہے ۔ سرکاری سکولوں میں بہتری آنے کی وجہ سے گزشتہ سال سرکاری اعداد شمار کے مطابق 34ہزار بچے پرائیوٹ سکولوں سے سرکاری سکولوں میں مائیگریشن کر چکے ہیں ۔

 

Check Also

بندوق کی زور پر ریاستی رٹ کو تسلیم نہیں کیا جا سکتا ہے ۔ ماسکو میں بات چیت ۔

اسفندیار ولی خان نے ماسکو میں میڈیا سے بات چیت کر تے ہوئے واضح کیا …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *