Monday , 22 July 2019
Home / Uncategorized / بندوق کی زور پر ریاستی رٹ کو تسلیم نہیں کیا جا سکتا ہے ۔ ماسکو میں بات چیت ۔

بندوق کی زور پر ریاستی رٹ کو تسلیم نہیں کیا جا سکتا ہے ۔ ماسکو میں بات چیت ۔

اسفندیار ولی خان نے ماسکو میں میڈیا سے بات چیت کر تے ہوئے واضح کیا کہ ریاستی رواداری، برداشت اور عدم تشدد کو پروان چڑھائیں۔ایک مخصوص گروہ نے پاکستان بھر میں رواداری اور عدم تشدد کی بات کرنے والوں کو کھڈے لائن لگایاہے۔آج قوم میں برداشت کا مادہ ہی ختم ہوگیا ہے۔جنگی جنونی اور متشدد گروہ پاکستان اور افغانستان کو پر امن نہیں رہنے دیتے ۔دہشتگردی کے خلاف پاکستان اور افغانستان کو مل کر کام کرنا ہوگا۔ایک دوسرے پر الزامات سے کچھ نہیں بنے گا۔ آج متشدد دنیا کو باچا خان کے عدم تشدد کے فلسفے کی اشد ضرورت ہے۔ حکومتیں اگر جنونیت کا خاتمہ چاہتی ہیں تو ریاستوں کو اپنے تدریسی نصاب میں عدم تشدد کے ہیروز کو ڈالنا ہوگا۔اسفندیار ولی خان نے واضح کیا کہ یہ ممکن نہیں کہ بزور بندوق ریاست کے رٹ کو تسلیم کروائیں۔

Check Also

خوست جامع مسجد میں دھماکہ۔ 28 افراد جان بحق 38 زخمی۔

افغانستان میں خوست میں واقعہ آرمی کے جامع مسجد میں نماز عصر کے دوران زور …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *