Monday , 12 November 2018
Home / National News / آسیہ مسیح کو جیل سے نکالے بغیر اکیلے بیرون ملک پناہ لینا نہیں چاہتا تھامگر یورپی یونین اور امریکہ نے زبردستی نیدر لینڈ پہنچا دیا ۔

آسیہ مسیح کو جیل سے نکالے بغیر اکیلے بیرون ملک پناہ لینا نہیں چاہتا تھامگر یورپی یونین اور امریکہ نے زبردستی نیدر لینڈ پہنچا دیا ۔

آسیہ مسیح کو پھانسی کی سزا سے باعزت بری کرنے والے پاکستان کے معروف قانون دان سیف الملوک ایڈوکیٹ نے نیدر لینڈ کے شہر ہاگو میں پریس کانفرنس سے خطاب کر تے ہوئے انکشاف کیا کہ ان کی خواہش کے برعکس یورپی یونین اور امریکہ نے مجھے پاکستان سے بہ حفاظت نکالا ۔پریس کانفرنس سے خطاب کر تے ہوئے سیف الملک ایڈوکیٹ نے کہا کہ سپریم کورٹ سے آسیہ مسیح کی باعزت بریت کے بعد پاکستان کے ہر شہر میں ہنگامے پھوٹنے کے بعد انہوں نے اسلام آباد میں یورپی یونین اور امریکہ کے سفیروں سے رابطے کئے جنہوں نے مجھے بہ خفاظت ایک محفوظ مقام پر پہنچایا اور تین دن تک ایک کمرے میں رکھنے کے بعد مجھے جہاز میں سوار کیا ۔انہوں نے کہا کہ میں نے یورپی یونین اور امریکی سفارتحانہ کے حکام پر واضح کیا کہ آسیہ مسیح کو جیل سے نکالے بغیر وہ کہیں نہیں جائیگامگر مجھ پر واضح کیا گیا کہ میری زندگی خطرے میں ہے ۔انہوں نے کہا کہ آسیہ مسیح کے بغیر وہ نیدر لینڈ میں خوش نہیں مگر ہر کوئی مجھے بتا تا ہے کہ میری زندگی کو شدید خطرات لاحق ہیں جبکہ پوری دنیا آسیہ مسیح کی تحفظ کی ذمہ داری پوری کر رہی ہے تو مجھے فکر مند ہو نے کی ضرورت نہیں ۔ انہوں نے کہا کہ یورپی یونین اور امریکہ نے پاکستان میں مجھے جس کمرے میں محفوظ رکھا تھاوہاں مجھے کھڑکی کھولنے کی بھی اجازت نہیں تھی۔انہوں نے کہا کہ تنگ آکر میں نے فرانسیسی سفیر کو فون کیا کہ میں یہاں رہنا نہیں چاہتا ۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان میں جاری کشیدگی کی وجہ سے ان کیلئے پاکستان میں رہنا ممکن نہیں ۔ سیف الملوک ایڈوکیٹ کو اسلام آباد ائیر پورٹ سے جہاز میں سوار کرکے پہلے روم پہنچایا گیا جہاں سے کرسچئن ہیومن رائٹس کے ایک تنظیم نے ان کو نیدر لینڈ پہنچایا ۔ انہوں نے یہ بھی انکشاف کیا کہ تحریک لبیک اور حکومت کے مابین معاہدہ کی کوئی حیثیت نہیں اور آسیہ مسیح بہت جلد پاکستان سے نکل جائیگی ۔ تحریک لبیک اور حکومت کے مابین معاہدہ کاعذ کا ایک ٹکڑا ہے جس کو کسی بھی وقت ردی کی ٹوکری میں ڈالا جا ئیگا۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان میں امریکی حکام نے ان کو یقین دہانی کرائی ہے کہ وہ آسیہ مسیح کا ہر طرح کا خیال رکھ رہے ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ فرانسیسی سفیر سے انہوں نے آسیہ مسیح کو پناہ دینے کے حوالے سے رابطہ کیا تو فرانسیسی سفیر نے کہا کہ اگر آپ قانونی طور پر فرانسیسی حکومت کو اپیل کرلیں تو ضرور ان کو پناہ دی جائیگی۔
کورٹسی ڈیلی ڈان

Check Also

سپریم کورٹ نے آسیہ مسیح کو باعزت طور پر بری کردیا۔

چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس میاں ثاقب نثار کی سربراہی میں جسٹس آصف سعید کھوسہ …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *